Wednesday, January 19, 2022
spot_imgspot_imgspot_imgspot_img
Homeتازہ ترینباس نے ڈانٹا کیوں؟ خاتون ورکر نے آفس میں 21 کروڑ روپے...

باس نے ڈانٹا کیوں؟ خاتون ورکر نے آفس میں 21 کروڑ روپے سے زائد کا تیل جلا دیا

تھائی لینڈ(این  اے  نیوز)دفتر میں ملازم اور باس کے درمیان نوک جھونک کے واقعات تو دنیا بھر کے اداروں میں دیکھنے میں آتے ہیں لیکن تھائی لینڈ میں پیش آئے اس واقعے نےسب کو حیرت میں ڈال دیاہے۔ڈیلی میل کی ایک رپورٹ کے مطابق تھائی لینڈ کے ایک تیل کے گودام میں کام کرنے والی 38 سالہ خاتون اپنے باس سے ناراض تھی جس کے باعث خاتون نے انتہائی خوفناک اقدام اٹھاتے ہوئے تیل کے گودام کو آگ لگا دی جس کے نتیجے میں گودام میں موجود کروڑوں روپے مالیت کا تیل جل گیا۔ رپورٹ کے مطابق تیل کے گودام میں آگ لگنے کا واقعہ 29 نومبر کو اس وقت پیش آیا جب این شریا نامی خاتون نے ایک کاغذ کا ٹکڑا جلا کر پیٹرول کے کنٹینر پر پھینک دیا جس کے نتیجے میں تھائی لینڈ کے صوبے نیکھم پیتھون میں واقع پریپاکارن آئل ویئر ہاؤس میں زبردست آگ بھڑک اٹھی۔ بعد ازاں آگ کو فائر ٹینڈرز کی مدد سے بجھاتے ہوئے خاتون کو گرفتار کرلیا گیا ہے جس نے اپنے جرم کا اعتراف بھی کرلیا ہے:فوٹوبشکریہ دی انڈیپینڈنٹبعد ازاں آگ کو فائر ٹینڈرز کی مدد سے بجھاتے ہوئے خاتون کو گرفتار کرلیا گیا ہے جس نے اپنے جرم کا اعتراف بھی کرلیا ہے:فوٹوبشکریہ دی انڈیپینڈنٹ میڈیا رپورٹس کے مطابق آگ لگنے سے گودام کے مالکان کو 40 ملین تھائی بھات یعنی 9 لاکھ پاؤنڈز (21 کروڑ سے زائد پاکستانی روپے) کا نقصان ہوا۔بعد ازاں آگ کو فائر ٹینڈرز کی مدد سے بجھاتے ہوئے خاتون کو گرفتار کر لیا گیا جس نے اپنے جرم کا اعتراف بھی کرلیا۔خاتون نے پولیس کو بتایا کہ وہ اپنے باس کی ڈانٹ ڈپٹ سے ناراض تھی، باس کی جانب سے خاتون کو کام بہتر بنانے کے ہدایات کی جاتی تھیں جس سے تنگ آکر خاتون نے گودام کو آگ لگا دی۔
RELATED ARTICLES

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

- Advertisment -spot_img

Most Popular

Recent Comments