0

روسی مشن چاند کی سطح سے ٹکرا کر ناکام ہوگیا

لگ بھگ 50 برس بعد روس کی جانب سے چاند تک روانہ کیے جانے والا لیونا 25 مشن آخری لمحات میں قمری سطح سے ٹکرا کر تباہ ہوگیا ہے۔1976 کے بعد روس نے ایک جدید خلائی جہاز چاند پر روانہ کیا تھا جس نے پہلے چاند کے گرد مدار میں چکر کاٹے۔ اسے چاند کے ایک گڑھے کے قریب اترنا تھا جس کا نام بوگیوسلوفسکی کریٹر ہے جو قمری قطبِ جنوبی پر موجود ہے۔اپنے آخری سفر سے قبل اس نےچاند کی شاندار تصاویر زمین پر بھیجی تھیں۔فی الحال اس کی شاندار تصاویر میں زمین اور دیگر اجرام کو دیکھا جاسکتا ہے۔ 800 کلوگرام وزنی لیونا 25 کو گزشتہ جمعے کو خلا میں روانہ کیا گیا تھا۔ اس کے بعد دھیرے دھیرے وہ چاند کی جانب بڑھا اور اب اس کے مدار کا باسی بن چکا تھا۔ اس کے اہم مشن میں چاند پر پانی کی تلاش شامل تھی لیکن مٹی کی ساخت کی کیمیائی آزمائش اور نمونے جمع کرنے کا کام بھی اس کے ذمے تھا۔ہفتے کے روز مشن قابو سے باہر ہوگیا، پھر اس کا رابطہ منقطع ہوا اور خیال ہے کہ اس کے بعد وہ مدار سے بھٹک کر چاند سے جا ٹکرایا ہے۔ واضح رہے کہ روس کی جانب سے لیونا 24 نامی مشن چاند کی جانب سال 1976 میں روانہ کیا گیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں