0

بیٹی کی جان کو خطرہ ہے، شیریں مزاری

تحریک انصاف کی سابق رہنما شیریں مزاری نے کہا ہے کہ بیٹی کی جان کو خطرہ ہے۔سابق وفاقی وزیر شیریں مزاری نے جوڈیشل کمپلیکس اسلام آباد کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میری بیٹی کو دھوپ میں بٹھائے رکھا، تھانے پہنچی تو بے ہوش گئی، بے ہوشی کی حالت میں ایمان کی دادا کی شاعری کی کتاب،نوٹ بک اور پین بھی اٹھا لیا گیا۔ان کا کہنا تھا کہ میری بیٹی کو بے ہوش ہونے پر سیل میں بغیر طبی امداد کے بند کر دیا گیا، سیل میں نہ کھانا استعمال کے قابل ہے اور نہ واش روم کی کوئی درست حالت ہے۔ انہوں نے کہا کہ میری بیٹی کو صحت کے مسائل ہیں جس پر اس نے کھانے سے منع کر دیا، میں نے بیٹی کو کہا ہے صحت کا خیال رکھو دشمن تو چاہتا ہے صحت خراب ہو، میری بیٹی کی جان کو خطرہ ہے۔شیریں مزاری نے اپیل کی کہ عدالتیں ملک میں انسانی حقوق کی حفاظت کریں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں